معروف امریکی کامیڈین جون ملینڈز کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو بے وقوف بنا کر ٹیلیفون پر ان کے ساتھ باتیں

واشنگٹن (ویب ڈیسک )معروف امریکی کامیڈین جون ملینڈز نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو بے وقوف بنا کر ٹیلیفون پر ان کے ساتھ باتیں کرتے رہے ۔

تفصیلات کے مطابق جون نے سی این این کو انٹرویو دیتے ہوئے بتایا کہ سب سے پہلے انہوں نے وائٹ ہاوس اپنی اصلی شناخت کے ساتھ ٹیلیفون کیا لیکن وائٹ ہاوس نے انکار کرتے کہا کہ صدر اس وقت مصروف ہیں ۔جون کا کہناتھا کہ میں نے دوبارہ فون کیا لیکن اس مرتبہ میننڈیزکا جعلی اسسٹنٹ ” شون مورے“ بن کر ، میں نے اپنا لحجہ تبدیل کر لیا جو کہ شائد انگیزی زبان کا سب سے تباہ کن لحجہ ہو گا ،میں نے کہا کہ میں شون مورے بات رہاہوں سینیٹر میننڈیز کا اسسٹنٹ اور میں صدر سے بات کرناچاہتاہوں ۔انہوں نے مجھے کہ وہ کال بیک کریں گے ،اور پھر انہوں نے مجھے کال بیک کی ۔

جو ن کاکہناتھا کہ ٹرمپ نے اس وقت فون کیا جب وہ ایئر فورس ون کے طیارے پر اپنی ریلی سے واپس فارگو ،نارتھ ڈکوٹا آ رہے تھے ،ڈونلڈ ٹرمپ نے فون اٹھایا اور میں نے ان سے باتیں کرنا شروع کر دیں ، میں نے انہیں کبھی نہیں بتایا کہ میں سینیٹر میننڈیز بات کر رہاہوں ۔ میں اس وقت شدید حیرت میں مبتلا ہو چکاتھا کہ میں نے کر دکھایا ۔

جون کا کہناتھا کہ ٹرمپ سمجھے کہ میں میننڈز ہوں جو کہ کرپشن کیس سے بری ہو ا ہے ، انہوں نے کہا کہ آپ پر کڑا وقت گزرا لیکن آپ کو مبارک ہو۔دونوں نے سپریم کورٹ کی مستقبل میں خالی ہونے والی نشست پر بھی بات چیت کی اور ٹرمپ نے آئندہ 10 سے 14 روز میں نئے چیف جسٹس کو نامزد کرنے کا وعدہ بھی کیا ۔

غیر ملکی میڈیا کا کہناہے کہ وائٹ ہاوس حکام نے اگلی صبح میننڈز کے دفتر میں رابطہ کیا لیکن جب ان سے اس معاملے پر بات کی گئی تو وہ بہت حیران ہوئے ۔تاہم وائٹ ہاوس نے غلطی کا اعتراف کر لیاہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں